Essay On Eid Ul Adha In Urdu (200 & 500 Words)

Essay On Eid Ul Adha In Urdu (200 words)


عید الاضحٰی یا بقرہ عید ، اسلامی تقویم کے مطابق دوسری بڑی عید ہے۔ یہ عید دو بڑے عیدوں میں سے ایک ہے جو دنیا بھر کے مسلمانوں کے لیے بہت اہم ہے۔ عید الاضحٰی کے دن ذبح کرنے کا دن ہے۔ یہ عید الفطر کے چار مہینوں بعد ایک اسلامی مہینے ذی الحجہ کی دسویں تاریخ کو منایا جاتا ہے۔

اس عید میں لوگ بکرے ، بچھڑے اور بھی مویشی ذبح کرتے ہیں جو قربانی کہلاتا ہے۔ یہ عید اللہ تعالی کی رضا کے لیے قربانی کا دن ہے جس کی یاد میں مسلمانوں نے بکرے کی قربانی کا روایتی عمل برقرار رکھا ہے۔

یہ عید مسلمانوں کیلئے خوشی کا دن ہے۔ لوگ اپنے دوستوں اور خاندان کو تحفے دیتے ہیں۔ مساجد میں نمازیں ادا کی جاتی ہیں اور ادکاروں کے ذریعے اللہ تعالی سے دعائیں مانگی جاتی ہیں۔

عید الاضحٰی کے دن مسلمانوں کی تعداد زیادہ ہوتی ہے۔ اس دن لوگ دوستوں اور خاندان کے ساتھ ملتے ہیں اور خوشی مناتے ہیں۔ اس عید کے دن لوگ ایک دوسرے کے خون میں دلچسپی رکھتے ہیں۔

Essay On Eid Ul Adha In Urdu (500 words)


عید الأضحی، جو عرف میں عید قربان کہلاتی ہے، مسلمانوں کی اہم ترین تہوارات میں سے ایک ہے۔ یہ تہوار دنیا بھر کے مسلمانوں کے لئے اہم ہے۔ عید الأضحی، مسلمانوں کے لئے خدا کی بخشش اور قربانی کا عظیم وقت ہے۔ یہ عید، اسلام کے دو بڑے تہوارات میں سے ایک ہے، دوسرا عید الفطر ہے۔

عید الأضحی، اسلامی کیلنڈر کے ذاتی مہینوں میں ان کے مقدس مہینے ذو الحجہ کے دسواں دن سے بروز اربعاء تک منائی جاتی ہے۔ اس دوران مسلمانوں کے لئے عمرہ کی زیارت، حج کی زیارت، قرآن پاک کی تلاوت اور عبادات کرنے کا موسم ہوتا ہے۔

عید الأضحی کا مقصد یہ ہے کہ مسلمان قربانی کے بذریعہ اللہ تعالیٰ کی بخشش، رحمت اور مہربانی کی نظیریں ہوں۔ اس عید کی مناسبت سے ذبحی جانوریں قربانی کردی جاتی ہیں۔ یہ قربانی بخشش کی نشانی ہے جو ابراہیم علیہ السلام کی عظیم پیشکش پر بنیاد رکھتا ہے۔

اس عید کے دن، مسلمانوں کے لئے سعادت کا دن ہوتا ہے۔ اس دن کو عید کے طور پر منایا جاتا ہے اور خاندانی دستخوانی کے ذریعے اس دن کا جشن منایا جاتا ہے۔

Related Essays: